آية الله العظمی نوری همدانی



آیة اللہ العظمی نوری ہمدانی کی ولادت سن ۱۳۰۴ ہجری شمسی میں ایران کے ہمدان نامی شہرمیں ہوئی ۔ انہوں نے سات سال کی عمرمیں اپنے والدسے ادبیات فارسی،کتاب گ لستان،انشاء ،حساب اوردوسر ے موضوعات پڑھناشروع ک ئے۔ انہوں نے لمعہ تک ت ع ی لم حاصل کرنے کے بعدسن ۱۳۲۲ ہجری شمسی میں حوزہ علمیہ قم میں قدم رکھا اور   یہاں پر انہوں نے آیة اللہ سیدمحمدباقرسلطانی طباطبائی ،آیة اللہ داماد،آیة اللہ شیخ محمدمجاہدی، آیة اللہ مرزامہدی تبریزی، آیة اللہ العظمی بروجردی،آیة اللہ رفیعی قزوینی ،آیة اللہ حاج میرسیدعلی یثربی اورحضرت امام خمینی رضوان اللہ تعالی علیہ کے درسوں میں شرکت کرکے اپنے علم میں اضافہ کیا۔

ایران کے اسلامی انقلاب کی کامیابی کے بعد امام خمینی نے انہیں یورپ ین ملکوں میں اپنا سفیربنایا۔موصوف دور حاضر میں حوزہ علمیہ قم میں فقہ واصول کا درس خارج کہنے میں مشغول ہیں۔

آیة اللہ العظمی نوری ہمدانی کی تصنیفات:

آیة اللہ العظمی نوری ہمدانی نے ویسےتو بہت سی کتابیں لکھی ں ہیں   لیکن ہم یہاں پر ان کی کچھ خاص کتابوں کے ہی نام دے رہے ہیں:

۱ ۔ امربالمعروف ونہی ازمنکر

۲ ۔ رسالہ توضیح المسائل

۳ ۔ ہزارویک مسائل فقہی۔

۴ ۔ منتخب المسائل

۵ ۔ مناسک حج

۶ ۔ آمادگی رزمی ومرزداری دراسلام



1 next