عبادتوں کے جلوے



عبادت کامفہوم اور اس کی وسعت:

الف۔عبادت کی ایک تقسیم بندی۔

ب۔نماز،کمال بندگی اور تقر ب الہی۔

ج۔مقدمات کے شرعی ہونے کا فلسفہ اور نماز کی جانب توجہ دینے والے عوامل۔

یااباذر!الکلمة الطیبة صدقة وکل خطوة تخطوھاالی الصلوٰة صدقة۔یااباذر!من اجاب داعی اللّٰہ واحسن عمارةمساجد اللّٰہ کان ثوابہ من اللّٰہ الجنة فقلت :بابی انت وامیّ یا رسول اللّٰہ کیف تعمر مساجد اللّٰہ؟قال لا تر فع فیہا الا صوات ولا یخاض فیہا بالبا طل ولا یشتری فیہا ولا یباع واترک اللغو مادمت فیہا  فان لم تفعل فلا تلومن یوم  القیامة الا نفسک۔یااباذر! ان اللّٰہ تعالی یعطیک مادمت جالسا فی المسجد بکل نفس تنفّست درجة فی الجنہ و تصلی علیک الملائکة وتکتب لک  بکل نفس فیہ عشر حسنات وتمحی عنک عشر سیات۔

یااباذر !اٴتعلم فی ایٴ شی ء انزلت ھذہ الٓایة:<اصبروا ورابطوا واتقوااللّٰہ لعلکم تفلحون>  ۱#  قلت:لا،فداک ابی وامی۔قال:فی انتظارالصلوٰةخلف الصلوٰة

یا اباذر!اسباغ الوضوء فی المکارہ من الکفارات وکثرة الاختلاف الی المساجد فذلکم  الرباط۔

یااباذر!یقول اللّٰہ تبارک وتعالی:ان احب العباد الی المتحابون من اجلی،المتعلقة قلو بہم بالمساجدوالمستغفرون بالاسحار اولئک اذا اردت باھلا الارض عقوبةذکرتہم فصرفت العقوبة عنہم۔

یااباذر!کل جلوس فی المسجد لغو الاّ ثلاثة:قرا ء ةمصل اوذکر اللّٰہ او سائل عن علم

          پیغمبر اسلام صلی اللہ علیہ و آلہ وسلم کی جناب ابو ذرۻسے کی گئی پند و نصائح کے بعض حصوں پر بحث و تحقیق کے بعد اب ہم ا س کے ایک اور حصہ کی بحث و تحقیق کریں گے جس کا مو ضوع مسجد،مسجد میں حاضر ہونے کے آداب اورنماز کی اہمیت ہے۔



1 2 3 4 5 6 7 8 9 10 11 12 next