حضرت امام زمانه عليه السلام کي حديث يں



مقدرات الہي کبھي مغلوب نہيں ہواکرتے ارادہ الہي کوردنہيں کياجاسکتا،اورتوفيق الہي پرکوئي

 چيزبھي سبقت نہيں لے جاسکتيـ  (بحارج 53 ،ص 191) ـ   

  خداوندعالم نے مخلوقات کوبيکارنہيں پيداکيااورنہ ان کوبے مقصدچھوڑرکھاہے ـ  (بحارج 53 ،ص 194) ـ

خداوندعالم ،حضرت محمد  کوعالمين کے لئے رحمت بناکرمبعوث کيااوران کے ذريعہ نعمتوں کوتمام کيا، اوران پرسلسلہ نبوت کوختم کيا، اورتمام لوگوں کي طرف رسول بناکربھيجاـ  (بحارج 53 ،ص 194) ـ

  خداوندعالم کاارشادہے :

الم،کيالوگوں نے يہ سمجھ لياہے کہ (صرف) اتناکہہ دينے سے کہ ”ہم ايمان لائے“ چھوڑدئيے جائيں گے اوران کاامتحان نہيں لياجائے گا ”پ 20 سورہ عنکوبت آيت 201“ ـ

لوگ کس طرح آزمائش ميں مبتلاہوگئے ہيں اورکس طرح حيرت وسرگرداني ميں مارے مارے پھرتے ہيں،دائيں بائيں بھٹکتے ہيں (يہ لوگ) دين سے جداہوگئے ہيں ياشک وشبہ ميں مبتلاہوگئے ہيں ياحق کے دشمن ہوگئے ہيں ياسچي روايات اوراخبارصحيحہ سے جاہل ہيںياجان بوجھ کربھلاديتے ہيں؟ (آگاہ ہوجاؤ) زمين کبھي حجت خداسے خالي نہيں رہتي خواہ ظاہرہوياپوشيدہ ہو،  (کمال الدين ج 2 ص 511 ،باب (توقيع من صاحب الزمان)ـ

کياتم نے خداکاقول نہيں سناکہ ارشادفرماتاہے : ايمان والوخدا،رسول اورصاحبان امرکي (جوتم ميں سے ہيں) اطاعت کروکياخداوندعالم نے قيامت تک ہونے والوں کے علاوہ کسي اورکوحکم دياہے؟ کياتم نے نہيں ديکھاکہ خدانے تمہارے لئے ايسي پناہ گاہيں قراردي ہيں جس ميں آکرتم پناہ ليتے ہواورکيا جناب آدم سے لے کرامام حسن عسکري تک ايسي نشانياں نہيں قرارديں کہ جن سے تم ہدايت حاصل کرو،جب بھي ايک پرچم گرااس کي جگہ دوسراپرچم لہراياجب بھي ايک ستارہ ڈوبادوسراستارہ اس کي جگہ طالع ہوا،اورجب امام حسن عسکري کاانتقال ہوگياتوتم کوگمان ہواکہ خدانے اپنے اوراپنے بندوں کے درميان کاواسطہ ختم کرديا،ہرگزنہيں نہ ايساہواہے نہ قيامت تک ہوسکتاہے خداکاامرظاہرہوکے رہے گاچاہے وہ کتناہي ناپسندکريں(کمال الدين ج 2 ص 478) ـ

امام گزشتہ (امام حسن عسکري) باکمال سعادت اپنے آباؤ(واجداد) کے نقش قدم پرچلتے ہوے ہماري نظروں سے پوشيدہ ہوگئے،ہمارے درميان ان کاوصي،ان کاعلم،ان کابيٹا،ان کاقائم مقام موجودہے، جوشخص بھي ان کي جانشيني کے سلسلے ميں ہم سے جنگ کرے گاوہ ظالم وگنہگارہوگا،اوراس کادعويدار ہمارے علاوہ وہي ہوسکتاہے جومنکروکافرہواورچونکہ امرخدامغلوب نہيں ہوسکتااوراس کارازظاہرنہيں کياجاسکتااورنہ اس کااعلان کياجاسکتاہے ورنہ ہم اپنے

 حق کااس طرح اظہارکرتے کہ تمہاري عقليں روشن ہوجاتيں اورتمہارے سارے شکوک زائل ہوجاتے،ليکن ہوتاوہي ہے جوخداچاہتاہے اورہرشئي کے لئے ايک وقت معين ہوتاہے لہذاتم لوگ تقوائے الہي اختيارکرواورہمارے سامنے سرتسليم خم کروـ (بحارج 53 ،ص 179) ـ



1 2 3 4 5 6 next